Health Tips Symptoms and Treatment

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi

مچھلی غذا بھی امراض سے تحفظ بھی

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi

مچھلی غذا بھی امراض سے تحفظ بھی

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi

طبی تحقیق کے مطابق مچھلی میں موجود مختلف اچھی قسم کی چکنائیوں کے استعمال سے جسم کا مدافعتی نظام مستحکم رہتا ہے ۔اس چکنائی کو عرف عام میں اومیگا تھری کہا جاتا ہے ۔مشاہدے سے یہ بات معلوم ہوئی ہے کہ مچھلی اور اس کا تیل باقاعدگی سے استعمال کرنے والے کئی امراض سے محفوظ رہتے ہیں ۔اومیگا تھری فیٹی ایسڈز انسانی جسم کی قوت مدافعت کو بڑھاتے ہیں اور اس طرح نہ صرف عام لوگ بیماریوں سے اپنا بچاؤ کر سکتے ہیں بلکہ امراض میں مبتلا افراد کی صحت کی بحالی بھی ممکن ہے ۔


دنیا میں امراض قلب موت کی بڑی وجہ ہے جبکہ اس کے بعد سب سے زیادہ ہلاکتیں سرطان کی وجہ سے ہوتی ہیں ۔یہ حقیقت تسلیم شدہ ہے کہ اس مہلک مرض سے ہونے والی پینتیس سے چالیس فیصد اموات کا سبب غذائی یا غذا کے نقائص ہوتے ہیں اور دل کے امراض کی طرح سرطان کا سب سے اہم سبب مضر چکنائیاں ہی ہیں ۔

امریکہ میں واقع ایک ادارے نیشنل کینسر انسٹی ٹیوٹ کی تحقیق کے مطابق چربی کا زائد استعمال کرنے والے بیشتر افراد سینے ،قولون ،مثانے کے غدود،رحم اور لبلبے کے سرطان میں مبتلا ہوجاتے ہیں ۔

اس ادارے نے اپنی ریسرچ میں بتایا ہے کہ صرف امریکہ میں ہر سال سینے کے امراض میں مبتلا افراد کی اموات میں پچیس فیصد کمی واقع ہو سکتی ہے اگر وہ روز مرہ کی غذا سے حاصل ہونے والے پچیس سے تیس فیصد حرارے روغنی اجزاء سے حاصل کریں ۔اسی طرح بڑی آنت (قولون)کے سرطان سے بچاؤ غذا میں ریشے کا استعمال زیادہ کرکے ممکن ہے۔
یہ خاصی حیرت انگیز بات ہے کہ نیو جرسی میں چوہوں پر اومیگا تھری چکنائیوں کا استعمال کیا گیا تو ان میں پھیپھڑوں اور مثانے کے غدود کے سرطان کا خاتمہ ہو گیا جس کی وجہ یہ تھی کہ ان چکنائیوں کے باعث ان کے اجسام میں ان کیمیائی اجزاء کی تیاری کا سلسلہ موقوف ہو گیا جو کہ سرطانی رسولیوں کا باعث ہوتے ہیں ۔مچھلیاں کھانے والے افراد پر کی جانے والی تحقیق بھی اس بات کا انکشاف کرتی ہے کہ مچھلی نہ کھانے والوں کے مقابلے میں مچھلی کھانے والے سرطان سے محفوظ رہے ہیں ۔
یہ درست ہے کہ سرطان کا ایک سبب موروثی اثرات بھی ہوسکتے ہیں ۔ایسے افراد کو ہمہ وقت اپنے بڑھتے ہوئے وزن پر توجہ رکھنا چاہیے اور اس میں کمی کے لیے غذا میں مچھلی کا استعمال بڑھا دینا چاہیے اور روغنیات میں کمی جس حد تک ممکن ہو کر لینا چاہیے ۔اس طرح سرطان کے امکانات کو کم کیا جا سکتا ہے بلکہ دیگر خطر ناک امراض سے تحفظ بھی ممکن ہے ۔
امراض قلب سے بچاؤ کے لیے بھی مچھلی کا استعمال مفید ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ مچھلی کے استعمال کے ساتھ ہی دیگر غذائی بے اعتدالیاں جاری رہیں ۔تحقیق سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ مچھلی کے استعمال کے ساتھ ہی وزن میں کمی کرکے غذا میں سبزیوں اور پھلوں کا تناسب بڑھا دینا چاہیے۔ورزش روزمرہ کے معمولات میں باقاعدگی سے شامل ہو تو اس کے اچھے اثرات ہوتے ہیں ۔
برطانیہ میں 1700ء کے زمانے میں گٹھیا کے مریضوں کا علاج مچھلی کا تیل پلا کر کیا جاتا تھا جو کہ اس وقت انتہائی بودار ہوتا تھا لیکن جو مریض اسے پی لیتے تھے وہ صحت یاب ہوجاتے تھے ۔اس حوالے سے جب تحقیق کی گئی تو معلوم ہوا کہ مچھلی کا تیل اور اس کا گوشت استعمال کرنے سے درد اور ورم پیدا کرنے والے اجزاء پروسٹا گلینڈن کی مقدار کم ہوجانے سے مریض شفا پا جاتے ہیں ۔
ہارورڈیونیورسٹی کے محققین نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ مچھلی کے تیل کے کیپسول کھانے سے جوڑوں کے درد اور ان میں پیدا شدہ سختی سے ہونے والی تکلیف میں افاقہ ہوتا ہے ۔
جسم میں لیکوٹرین کا اضافہ سانس کی تکلیف ،دمہ ،کھانسی اور سانس پھولنے جیسے امراض کا سبب بنتا ہے مچھلی کا باقاعدہ استعمال جسم میں لیکوٹرین کی مقدار بڑھنے نہیں دیتا اور یہی وجہ ہے کہ انتہائی سرد ممالک میں مچھلی زیادہ کھانے والے افراد دمے اور کھانسی سے محفوظ رہتے ہیں ۔کہا جاتا ہے کہ دمے کے حملے کے وقت مچھلی کا تیل استعمال کرانے سے دورے کی شدت میں کمی آجاتی ہے جن خاندانوں میں یہ مرض موروثی ہوتا ہے ان کے بچوں کو شروع سے مچھلی اور اس کا تیل استعمال کرانے سے فائدہ ہوتا ہے ۔
لبلبے کی کار کردگی میں کمی سے شوگر کا مرض ہوتا ہے ۔اس میں مبتلا افراد کی اکثریت کے خون میں چر بیلے مادے ،ٹرائی گلیسر ائیڈ خصوصاً کولیسٹرول LDLکی بلند سطح ہوتی ہے جو آخر کار ہائی بلڈ پریشر اور امراض قلب کا باعث بنتی ہے ۔تحقیق سے یہ معلوم ہوا ہے کہ مچھلی کھانے والے افراد میں ذیا بیطس کے باوجود مضر چکنائیوں کی سطح کم رہتی ہے ۔
جسم کے مدافعتی نظام کو مستحکم کرنے کے لیے ضروری ہے کہ مچھلی کو غذا کا ایک اہم جزوبنالیا جائے ۔ایک ہفتے میں کم از کم تین مرتبہ مچھلی کا استعمال کئی امراض سے محفوظ رکھ سکتا ہے اور جو لوگ بعض امراض میں مبتلا ہیں وہ اپنے معالج کے مشورے سے مچھلی کے گوشت اور تیل کے مناسب استعمال کے بعد صحت کی بحالی میں کامیاب ہو سکتے ہیں ۔

تاریخ اشاعت: 2019-01-02

Related Articels

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi Fish diet also protects diseases
According to medical research, the use of various good types of fat in the body keeps the body immune system stable. This fatigue is called Omega Thary in the alphabetic general. From the point of view it is known that the fish and its oil regularly The users who live in many diseases are safe. Acne-fatty fatty acids increase the strength of human body’s strength, and thus not only ordinary people can save themselves from diseases, but also to restore the health of those who suffer from diseases.

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi Acne is a major cause of death in the world, whereas most of the deaths occur due to cancer. This fact is confirmed that 40 percent of the deaths from this deadly disease cause dietary or dietary defects. And like heart disease, the most important cause of cancer is hazardous chickens.

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi According to the research of the National Cancer Institute, a company based in the United States, most of the people using fat are in chronic, stimulus, obesity glands, cures and pancreatic cancer.

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi In this study, this institution has said that chronic diseases every year in the United States can decrease by 25 percent if they get from twenty-five to 30 percent of the ferrous ingredients in everyday diet. Similarly, preventing cancer from large intestines may be more likely to use fiber in the diet.
It is a wonderful thing that Omega-thieves used on mice in New Jersey were eliminated,

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi in which the lung and lymph gland’s cancer was eliminated, due to the fatigue due to these chemicals, these chemical components Preparation of a series of obstacles that lead to gastrointestinal problems. The research done on those who eat foods suggests that fishermen are not protected from cancer.
It is true that there may be a cause of cancer due to some symptoms.

Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi These people should focus on increasing their weight at times and should reduce the use of food in food and reduce the food shortage as far as possible. It is possible to reduce the chances of cancer, but also protecting other riskless diseases.
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi The use of fish is also useful for the prevention of diseases, but it does not mean that other food straines continue with the use of fish. It is evident from the use of fish to reduce the weight loss By dieting should increase the proportions of vegetable and fruit. It regularly has good effects when exercise is added regularly.
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi In the UK during the 1700s, arthritis were treated with oil by placing fish oil, which was extremely Buddhist at the time, but the patient who used to drink it was healthier. In this context, when research was found Using fish oil and its meat reduces the amount of pain and vomiting which reduces the amount of prosta-glanden patients healed.
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi Researchers of Harvardonian University have also confirmed that eating food oil capsules enhances dysfunction and pain caused by them.
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi Increase of leuktorin in the body causes respiratory disorders, asthma, cough and respiratory diseases. Regular use of fish does not give rise to leuktorine in the body, and that is why people with excessive cold countries are more likely to eat asthma and cough. It is said that using fish oil at the time of aerial attack, reduces the severity of the visit of families whose family is diagnosed, their children benefit from using fish and oil from the beginning. happens .
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi Reduction of carbohydrates reduces the risk of sugar. The majority of people suffering from this type of kidney disease, triglyceride, is a high level of cholesterol LDL, which eventually causes high blood pressure and diarrhea. From research, it has been found that in spite of nutritious fatty levels, the level of hazardous fat is low.
Machli Ghiza Bhi Amraaz Se Tahaffuz Bhi To strengthen the body immune system, it is necessary that fish should be given an important diet. At least three times a week, use of fish can be protected from many diseases, and those who suffer from some diseases, their physician Advice can help recover the health after proper use of fish and oil.

Source Urdupoint..

Tags
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close