Health Tips Symptoms and Treatment

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj

خو شبو سے سرطان کا علاج

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj

خو شبو سے سرطان کا علاج

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj

آپ نے کبھی محسوس کیا ہے کہ بعض خو شبوؤں کے سونگھنے سے فر حت اور سکون کا احساس ہوتا ہے تو بعض سے دوران خون میں اضافہ اور جسم میں حرارت یا گرمی کا احساس ہوتا ہے۔جس طرح بعض چیزوں کو دیکھنے سے منھ میں پانی آتا ہے، اسی طرح بعض خو شبوؤں سے بھوک بھی چمک جاتی ہے۔ ایسا کیوں ہوتا ہے؟
اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ یہ اشیا ء ہمارے جسم میں مختلف کیمیائی مادے تیار کرنے کے عمل کو تحریک دیتی ہیں۔

املی اور آلو بخارے کو دیکھ کر تُھوک کے غدود اپنا کام تیز کر دیتے ہیں، لہسن،پودینے اور دیگر مسالوں کی خو شبو معدے کی رطوبات میں اضافہ کرکے بھوک بڑھا دیتی ہے۔اس سے ثابت ہوتا ہے کہ خوشبوو آواز سے مختلف اور مخصوص کیمیائی اجزا کی تیاری پر آمادہ کیا جا سکتا ہے۔
حیدر آباد کن کے ضلع رائچور میں ایک نابینا حکیم اپنی حذاقت کے لیے مشہور تھے۔

ان کے مطب میں ایک ہندو بنیے کو لایا گیا، جو بھوک نہ لگنے کا شاکی تھا۔فقدانِ اشتہا کا اس نے بہت علاج کروایا،لیکن کوئی کارگر ثابت نہ ہوا۔ حکیم صاحب نے اس کی نبض دیکھی اور سوالات کیے۔اس نے یہ قرار کیا کہ یہ من پسند غذائیں بھی نہیں کھا سکتا، کیوں کہ اسے قطعاََ کوئی اشتہا نہیں ہوتی۔ وہ ہندو کٹر قسم کا تھا اور بجز سبزی کو کوئی چیز کھانے پر آمادہ نہ تھا۔
حکیم صاحب نے اس شرط پر اس کا علاج منظور کیاکہ وہ دن میں دو با ران کے مطب آئے۔ مر تا کیانہ کرتا کے مصداق وہ راضی ہوگیا۔
اگلی صبح انھوں نے بکری کا معدہ اور آنتیں خوب صاف کروا کر اُ نھیں اشتہا انگیز مسالوں کے ساتھ پکوایا اور ایک پیالے میں نکلواکر اس پر چھلنی ڈھک کر مریض کو اس کی خو شبو دار بھاپ سونگھنے کی ہدایت کی۔ شام میں ابھی یہی عمل دہرایا گیا۔ہفتے عشرے کے اس خو شبو سے علاج نے مریض کے خفتہ معدے کو بیدار کر دیا۔ ہاضم رطوبتیں ایک بار پھر اپنا کام کرنے لگیں۔ اور محض اس علاج سے اس کی بھوک رفتہ رفتہ بحال ہوگی۔
اسی طرح کا تجربہ افعال الاعضا کے روسی ماہر پاولوف(pavlov)کر چکے تھے۔ انھوں نے کھانے سے پہلے گھنٹی بجا کر کتے کو کھانا دینے کا معمول بنایا۔گھنٹی کی آواز سنتے ہی کتے کے لعابی غدود متحرک ہو جاتے اور اس کو منھ سے رال ٹپکنے لگتی۔اس تجربے میں آواز تحریک کا باعث قرار پائی۔
امریکا کی البا مایونی ورسٹی میں تحقیق کاروں نے چوہوں پر خو شبو کے اثرات کے تجربات کیے۔انھوں نے ہر تیسرے دن چار گھنٹوں تک زیر تجربہ چوہوں کو کافور سنگھایا اور اس سے پہلے انھیں ایک اایسے کیمیائی مرکب کے ٹیکے لگاتے رہے۔جس سے جسم میں انٹرفیرون کی تیاری میں اضافہ ہوجاتا ہے۔ یہ حیاتیاتی کیمیائی جزو ہمارے جسم میں ان خلیات (سیلز) کو مستعد اور چوکس کر دیتا ہے ،جو سرطانی خلیات کا مقابلہ کرتے ہیں۔طبی تحقیق کے مطابق یہ سرطان کے خلاف ہمارے جسم کی گویا پہلی دفاعی لائن ہوتی ہے۔
ان تجربات کو نو مرتبہ دہرانے کے بعد انھوں نے چوہوں کو تین دن آرام کرنے دیا اور چوتھے دن ان میں سے بعض کو دوبارہ صرف کا فور سنگھائی یعنی انٹر فیرون کو تحریک دینے والا ٹیکا نہیں لگایا، لیکن وہ یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ ان میں محض کا فور کے سونگھنے سے انٹر فیرون کی افزایش میں تین گنا ضافہ ہوگیا۔
مشاہدات اور سائنسی تجربات سے یہ بات ثابت ہوچکی ہے۔ کہ رنج و غم،دکھ ،درد،ذہنی دباؤ اور مسرت وشادمانی جیسے جذبات جسم میں مختلف کیمیائی مادوں کو تحریک دیتے ہے۔اس کے علاوہ یہ بات بھی ثابت ہوچکی ہے کہ ہمارے جسم کے مدافعتی نظام کا تعلق مرکزی اعصابی نظام سے ہے۔ ان تجربات سے اب یہ بات بھی واضح ہوتی جارہی ہے۔کہ خو شبو اور آواز وغیرہ سے جسم میں کیمیائی ردعمل پیدا کیا جاسکتا ہے۔البامایونی ورسٹی کے تحقیق کاروں کے مطابق ان کا اصل کام لوگوں کے مدافعتی نطام کی تربیت اور تحریک کا ایک ایسا طریقہ تلاشک کرنا ہے۔جو سرطان دوائیں کرتی ہیں۔ جسم کو اس قسم کی تحریک پہنچا کر خود مدافعتی پر آمادہ کرنا محفوط بھی ہوگااورسستا بھی۔
اس ذیل میں طبی دواؤں پر غور کرنا چاہیے اور ان کی افادیت کا مطالعہ اس اصول پر کرنا چاہیے۔مطب کے اکثر مرکبات خوش ذائقہ اور خو شبو دار ہوتے ہیں۔کیوڑہ،گلاب،بید مشک۔(ایک خو شبودار پودا) کا شمار بہترین خو شبوؤں میں ہوتا ہے۔اور عرقیات طبی دواوں میں اہمیت کے حامل ہیں۔اسی طرح زفران،عنبرمشک کی خو شبوؤں پر غور کرنا چاہیے کہ یہ طبی مرکبات میں اہمیت کی حامل ہیں،طبی نسحہ جات یقینا اسی نوع کو تجربات پر مشتمل ہیں۔آج ہم بہ آسانی ان سائنسی توجیہ کر سکتے ہیں۔

تاریخ اشاعت: 2019-31-01

Related Articels

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj But therapeutic treatment of apples
You have ever felt that the smell of some butterflies is a feeling of relaxation and relaxation, during some blood increases and there is a feeling of heat or heat in the body. Just like seeing something, water comes in the mouth. It is, as well, hungry by some other perfumes also shines. Why does this happen?
The main reason for this is that these items move the process of producing various chemicals in our body.

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj Seeing the acid and potato fever, the glands of the spine accelerate their work, but the spoil of garlic, fodder and other spices increases hunger by increasing the foods of food. It proves that the perfume is different from different sounds and specific chemicals. The ingredients can be prepared for preparation.
A blind ruler was famous for his kindness in the Kishore district of Hyderabad.

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj He was brought to a Hindu man, who was shocked to not be hungry. He treated a lot of affectionate adults, but no worker proved. Hakim looked at her pulse and asked questions. She admitted that she could not eat food like this as well because she does not have any rust. He was a Hindu maneuverer and was not willing to eat anything by vegetable.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj Hakim passed his treatment on condition that he came in two days in the morning. He was pleased with his death.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj On the next morning, they cooked the goat and the intestines cleanly, with no spicy spices, leaving them in a bowl, covered the skin and instructed the patient to steam it. The same process was repeated in Syria. The treatment of this weekend in the evening has alerted the patient’s raw food. Hemorrhoids can be done again. And this treatment will definitely restore its hunger.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj Similar experiences were done by Russia’s Russian expert Pavlov. They made the usual bell to eat the bell before the meal. When hearing the sound, the dog glands were dynamic, and it began to tear from the mouth. This experience has led to sound movement.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj Researchers at the American Alba Maine Varti experimented with the effects of mice on the mice. They coughed the cats experienced for four hours every three days, and they used to vaccine them with a chemical mixture before it. I increase the interface of the interface. This biological chemical component enhances and stimulates the cells in our body that contaminate antibiotic cells. According to a study, it is the first defense line of our body against cancer.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj After repeating these experiences nine times, they allowed the mice to rest for three days, and on the fourth day, some of them did not just set Fort Singh, an introducing taco, but they were surprised to see that The only gold processing of this was three folds in the frequency of interstitial.
Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj It has been proved by observations and scientific experiences. That emotions like pain and grief, pain, pain, mental stress, and dignity tend to move different chemicals in the body. Moreover, it has proved that our body’s immune system is related to the central nervous system.

Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj These experiences are now evident from these experiences. However, sugar and sugar can be done in the body with a chemical reaction. According to researchers of Belameni Varti, their original work is the training of people’s immune system and movement of movement. There is a way to find out how to treat cancer. Self-immune to the body by moving this type of movement will be a source of pleasure.
Below should be considered by the medical medicines and their utility should be studied on this principle. Most of the compounds of the stomach are delicious and tasteful. Cobra, Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj Rose, Buddha Mushk. (One Succeeding Plant) But it is in the spices. And nutrients are important in medical medicines. Similarly, but Zafar, however, Khushbo Se Sartan Ka Ilaaj should be considered to be anointing potatoes that they are important in medical compounds, medical prescriptions certainly contain similar experiences. Today, we can easily pass that scientific.

Date published: 2019-31-01

Source Urdupoint...

Tags
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close